چکبالاپور: سری نواسا ساگر ڈیام کے قریب میڈیکل کے 1 طالب علم سمیت 2 لوگوں کی موت

چکبالاپور: 10/ستمبر۔ چکبالاپور تعلقہ میں سری نواساگر ڈیام کے پاس تیراکی کے لیے گئے میڈیکل کالج کا ایک طالب علم اور طالب علم کو بچانے گیا ایک نوجوان ڈوب کر فوت ہونے کی وردات پیش آئی ہے

متوفین کی شناخت میسور کے رہنے والے سچیدانند ایم بی بی ایس سال اول کے طالب علم سچیدانند (20) گوری بدنور تعلقہ کے رام چندر پور گاؤں کے نریش بابو کی حیثیت سے کی گئی ہے۔

سنیچر کو سچیدانند میڈیکل کالج کے ہاسٹل سے باہر آکر اپنے دوستوں کے ساتھ سری نواسا ساگر ڈیام میں تیراکی کرنے گیا، جب سچیدانند بغیر تیراکی کے ڈوب رہا تھا تو گوریبیدانور تعلقہ کے رام چندر پور کا نریش بابو بچانا کی کوشش کرتے وہ بھی ڈوب کر غرق ہوگیا۔

واقعے کی اطلاع ملتے ہی چکبالا پور دیہی پولیس اسٹیشن کے سب انسپکٹر پردیپ پجاری اور ان کے عملے نے جائے وقوعہ کا دورہ کیا اور فائر بریگیڈ کے عملے کے تعاون سے دونوں افراد کی لاشوں کی تلاش شروع کردی۔چک بالاپور ضلع میں ایک ہفتہ سے بارش ہورہی ہے اور اکثر جھیلوں کے ریکوں میں پانی بھر گیا ہے۔ بھرا ہوا ہے اور پانی بہہ رہا ہے۔

شہریوں نے ڈسٹرکٹ سپرنٹنڈنٹس آف پولیس اور ڈسٹرکٹ کلکٹرس سے اپیل کی ہے کہ وہ اسکولوں اور کالجوں میں جانے والے طلباء اور قدرتی نظارہ کا مشاہدہ کرنے آنے والے سیاحوں کو تیراکی کے لیے اجازت نہ دیں معقول احتیاطی اقدامات کریں

چکبالا پور ضلع کلکٹر این ایم ناگراج، تحصیلدار گنپتی شاستری، سرکل انسپکٹر راجو اور دیگر نے جائے وقوع کا معائنہ کیا ہے شام 7 بجے تک تلاشی مہم چلائی گئی لیکن کوئی لاش نہیں ملی۔ذرائع نے بتایا کہ این ڈی آر ایف کی ٹیم کل صبح پہنچے گی اور صبح 6 بجے سے تلاشی مہم چلائی جائے گی۔ (رپورٹ:تمیم پاشاہ)

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

error: Content is protected !!