دنیا کے ٹاپ-10 امیروں کیلئے اچھا نہیں رہا آج کا دن، سب خسارے میں

امبانی کی دولت 1.40 ارب ڈالر کی کمی کے ساتھ 92.9 ارب ڈالر ہو گئی، گوتم اڈانی کی دولت 2.19 ارب ڈالر کمی کے ساتھ 92.7 ارب ڈالر رہ گئی ہے۔

آج یعنی جمعہ کا دن دنیا کے ٹاپ-10 امیروں کے لیے انتہائی خسارے والا ثابت ہوا۔ ان کی ملکیتوں میں زبردست گراوٹ درج کی گئی ہے۔ سب سے زیادہ خسارہ ایلن مسک کو اٹھانا پڑا ہے جن کی دولت 24 گھنٹے میں 14 ارب ڈالر گھٹ گئی۔ اس کے علاوہ جیف بیجوس، وارین بفے، مکیش امبانی اور گوتم اڈانی کو بھی نقصان اٹھانا پڑا ہے۔

دنیا کے سب سے امیر شخص اور ٹیسلا و اپیس ایکس کمپنی کے مالک ایلن مسک کی دولت 14 ارب ڈالر گھٹ کر جہاں 203 ارب ڈالر رہ گئی، وہیں امیزون کے بانی جیف بیجوس کو گزشتہ چوبیس گھنٹے میں 4.20 ارب ڈالر کا نقصان اٹھانا پڑا ہے۔ اس خسارے کے بعد ان کی ملکیت 127 ارب ڈالر پر پہنچ گئی ہے۔

گراوٹ کے اس دور میں ٹاپ-10 کی فہرست میں تیسرے نمبر پر موجود برنارڈ ارنالٹ کی دولت 3.89 کروڑ ڈالر گھٹ کر 122 ارب ڈاکر، مائیکروسافٹ کے بل گیٹس کی ملکیت 1.73 ارب ڈالر گھٹ کر 112 ارب ڈالر، اور امیروں کی فہرست میں پانچویں نمبر پر موجود لیری پیج کی دولت 2.99 ارب ڈالر گھٹ کر 97.1 ارب ڈالر رہ گئی ہے۔

قابل ذکر بات یہ ہے کہ ٹاپ-10 امیروں کی فہرست میں شامل دونوں ہندوستانی صنعت کاروں مکیش امبانی اور گوتم اڈانی کو بھی گھاٹا بہت زیادہ ہوا ہے۔ جہاں ایک طرف امبانی کی دولت 1.40 ارب ڈالر کی کمی کے ساتھ 92.9 ارب ڈالر ہو گئی ہے، وہیں اڈانی کی دولت 2.19 ارب ڈالر کمی کے ساتھ 92.7 ارب ڈالر رہ گئی ہے۔

اتنا ہی نہیں، چھٹے نمبر پر موجود مشہور سرمایہ کار وارین بفے کے لیے بھی جمعہ کا دن برا ثابت ہوا۔ ان کی دولت میں 3.43 ارب ڈالر کی کمی آئی ہے۔ اس کے بعد بفے کی دولت 93.4 ارب ڈالر رہ گئی ہے۔ ساتویں مقام پر قابض سگریئی برن کی دولت میں بھی 2.82 ارب ڈالر کی کمی ہوئی ہے، اور اب وہ 93.1 ارب ڈالر کے مالک ہیں۔

دنیا کے امیر ترین اشخاص میں دسویں مقام پر قابض اسٹیو بالمر کی بات کی جائے تو ان کی دولت 2.19 ارب ڈالر نقصان کے ساتھ اب 87.7 ارب ڈالر رہ گئی ہے۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

error: Content is protected !!