اس کا کوئی ثبوت نہیں کہ ‘کورونا کی تیسری لہر بچوں کیلئے خطرناک ہوگی!: ڈائریکٹر دہلی ایمس

دہلی ایمس کے ڈائریکٹر ڈاکٹر رندیپ گلیریا نے کہا ہے کہ کورونا کی تیسری لہر بچوں پر اثر انداز ہوگی اس کا کوئی ثبوت نہیں ہے

نئی دہلی: کورونا کی تیسری لہر کے حوالہ سے کئی طرح کی قیاس آرائیوں کے درمیان ایمس کے ڈائریکٹر ڈاکٹر رندیپ گلیریا نے واضح کیا ہے کہ تیسری لہر بچوں پر اثر انداز ہوگی اس کا کوئی ثبوت نہیں ہے۔ انہوں نے کہا کہ دنیا بھر میں کسی سروے سے اس نتیجہ کو اخذ نہیں کیا گیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ تیسری لہر کب آ سکتی ہے اور بچوں پر اس کا کیا اثر ہوگا، اس حوالہ سے تاحال کوئی گلوبل ڈیٹا دستیاب نہیں ہے۔ اب تک دنیا میں کوئی ایسا ڈیٹا دستیاب نہیں ہے کہ بچوں میں خطرناک انفیکشن ہوگا۔

ڈاکٹر گلیریا نے کہا کہ کورونا کی دوسری لہر کے دوران بھی جو بچے متاثر ہوئے ہیں وہ ہلکے بیمار پڑے۔ انہوں نے کہا کہ ایسا امکان نظر نہیں آتا کہ آئندہ وقت میں بچوں کے لئے کوئی سنگین خطرہ لاحق ہوگا۔ دو مہینے سے بھی زیادہ وقت کے بعد منگل کے روز ملک میں کورونا انفیکشن کے ایک لاکھ سے کم معاملے درج کیے گئے ہیں۔

مرکزی وزارت صحت نے منگل کے روز صبح جاری اعداد و شمار کے مطابق ملک میں کورونا کے 86 سے زیادہ معاملے درج کیے گئے۔ یہ تعداد گزشتہ 66 دنوں میں سب سے کم رہی۔ جس کے بعد ہندوستان میں کورونا کے فعال مریضوں کی تعداد 13 لاکھ تک پہنچ گئی۔ تاہم بدھ کے روز اس میں کچھ اضافہ درج کیا گیا اور گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران 92 ہزار سے زیادہ نئے معاملے درج کیے گئے۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

error: Content is protected !!