یوگی حکومت نے 50 سال سے زائد عمر کے ’اَن فٹ‘ پولیس والوں کو ریٹائر کرنے کا کیا فیصلہ

اس سال مارچ میں 50 سال مکمل کرنے والے یو پی کے پولیس اہلکاروں کی اسکریننگ کی جائے گی، جو نااہل، غیر ذمہ دار اور بدعنوان پائے جائیں گے انھیں ریٹائر کر دیا جائے گا۔

اتر پردیش کی یوگی حکومت نے ایک اہم قدم اٹھاتے ہوئے ریاست کے 50 سال سے اوپر کے نااہل پولیس اہلکاروں کو ریٹائر کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ اس سال مارچ میں 50 سال پورے کرنے والے یو پی پولیس اہلکاروں کی اسکریننگ کی جائے، اور اس میں جو بھی نااہل، غیر ذمہ دار اور بدعنوان پائے جائیں گے، انھیں سبکدوش کر دیا جائے گا۔ اس سلسلے میں نیا حکم ایڈیشنل ڈائریکٹر جنرل آف پولیس (اے ڈی جی) سنجے سنگھل کے ذریعہ جاری کیا گیا ہے۔

ایک سینئر پولیس افسر نے کہا کہ حکم کے مطابق سبھی پولیس محکماتی سربراہان اور ضلع پولیس سربراہان کو کانسٹیبل سے لے کر انسپکٹر تک کے پولیس اہلکاروں کی اسکریننگ کا عمل پورا کرنا ہوگا۔ انھوں نے کہا کہ حکم میں کہا گیا ہے کہ 31 مارچ، 2021 تک 50 سال کی عمر مکمل کرنے والے سبھی پولیس اہلکاروں کی اسکریننگ ان کی کارکردگی کی بنیاد پر کی جائے گی۔

نااہل، ڈسپلن شکن اور بدعنوان پولیس افسران کو باہر نکالنے کے لیے ریاستی حکومت نے گزشتہ دو سالوں سے اس پالیسی پر زور دیا ہے۔ اس تعلق سے اے ڈی جی (نظام قانون) پرشانت کمار نے واضح کیا ہے کہ ’’یہ کوئی نئی بات نہیں ہے، بلکہ 50 سال سے اوپر کے ملازمین کی اسکریننگ سے متعلق حکم سال 1985 سے نافذ ہے اور یہ دیگر محکموں اور مرکزی حکومت کی یونٹس میں بھی ہوا ہے۔‘‘

پرشانت کمار نے کہا کہ ’’اس اسکریننگ کو یہ نہیں مانا جانا چاہیے کہ ملازمین کو جبراً سبکدوش کیا جا رہا ہے، لیکن یہ سروس میں ان کی ضرورت کے مطابق کیا گیا ہے۔‘‘ انھوں نے مزید کہا کہ ’’50 سال سے زیادہ عمر کے وہ پولیس اہلکار، جن کی اسکریننگ ایک بار ہو چکی ہے، وہ آگے کی اسکریننگ کا حصہ نہیں ہوں گے۔‘‘

واضح رہے کہ 2019 میں ریاست بھر میں انسپکٹر سے لے کر چوتھے درجہ کے ملازمین تک کے 364 پولیس اہلکاروں کو لازمی سبکدوشی دی گئی تھی۔ ان میں 11 انسپکٹر، 57 ڈپٹی انسپکٹر، 6 ڈپٹی انسپکٹر (وزارتی)، 80 ہیڈ کانسٹیبل اور 200 کانسٹیبل و چوتھے درجہ کے ملازمین شامل تھے۔ اس کے علاوہ کچھ مقامی پولیس سروس اور انڈین پولیس سروس کے افسران کو بھی 2019 میں لازمی سبکدوشی دی گئی تھی، جن میں سب سے زیادہ مشہور معاملہ آئی پی ایس امیتابھ ٹھاکر کا تھاـ

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

error: Content is protected !!