بی جے پی کے سینئر لیڈر پر ’سیکس ریکٹ‘ چلانے کا الزام، چھاپے میں 73 گرفتار

شیلانگ: میگھالیہ میں سیکس ریکٹ (کوٹھا) چلانے کے سنسنی خیز معاملہ کا انکشاف ہوا ہے۔ میگھالیہ پولیس سے موصول ہونے والی معلومات کے مطابق اس معاملے میں ریاستی بی جے پی کے نائب صدر برنارڈ ماراک بھی ملوث ہیں۔

این ڈی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق میگھالیہ پولیس نے دعویٰ کیا ہے کہ جمعہ کی رات ماراک کے ریزارٹ میں چھاپے کے بعد اس ریکیٹ کا پردہ فاش کیا گیا ہے۔ یہ ریزارٹ مغربی گارو پہاڑی اضلاع کے تورا میں موجود ہیں۔ فی الحال پولیس نے مقدمہ درج کر کے ملزم لیڈر کی تلاش شروع کر دی ہے۔ تاہم اس معاملے میں پولیس نے 73 لوگوں کو گرفتار بھی کیا ہے۔ پولیس نے اسی ریزورٹ سے پانچ بچوں کو بھی تحویل میں لیا ہے۔

واقعہ کے سامنے آنے کے بعد سے ریزورٹ کے مالکان ‘مفرور’ ہیں۔ ساتھ ہی ماراک نے بھی اس واقعے کے حوالے سے ایک بیان جاری کیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ پولیس نے بغیر کسی وارنٹ کے یہ چھاپہ مارا۔ انہوں نے میگھالیہ کے وزیر اعلیٰ پر انہیں نشانہ بنانے کا بھی الزام عائد کیا۔ اس سب کے درمیان پولس اس معاملے کو فروری میں درج کیس سے جوڑنے پر غور کر رہی ہے۔ وہیں میگھالیہ بی جے پی اس معاملے پر خاموشی اختیار کئے ہوئے ہے۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

error: Content is protected !!