ایم ایل اے ​​مہیش نے IAS افسر روہنی سندھوری پر لگایا بدعنوانی کا الزام

مہیش نے ریاستی حکومت اور چیف سکریٹری روی کمار پر زور دیا کہ وہ افسر کو معطل کرکے انکوائری کرے۔

ایم ایل اے سا را ​​مہیش نے آئی اے ایس افسر روہنی سندھوری پر الزام عائد کیا ہے کہ وہ میسورو کی ڈپٹی کمشنر ہونے کے دوران بڑے پیمانے پر بدعنوانی میں ملوث ہیں۔

جمعہ کو یہاں ایک پریس کانفرنس میں مہیش نے سندھوری پر طاقت کا غلط استعمال کرنے اور کپڑے کے تھیلوں کی خریداری کے سلسلے میں 6 کروڑ روپے کی مبینہ بے ضابطگیوں کا الزام لگایا۔ سندھوری نے ضلع کے لوگوں میں تقسیم کرنے کے لیے 14.71 لاکھ کپڑے کے تھیلے خریدے تھے۔ جبکہ ہر بیگ کی قیمت 13 روپے ہے، افسر نے اسے 52 روپے کی قیمت پر خریدا۔

مہیش نے ریاستی حکومت اور چیف سکریٹری روی کمار پر زور دیا کہ وہ افسر کو معطل کر کے انکوائری کرے۔ مہیش نے کہا، “میں 2 سے 3 دن انتظار کروں گا اور پھر چیف سیکرٹری کے دفتر کے سامنے احتجاج دھرنا دوں گا۔”

مہوش نے یہ بھی کہا کہ وہ جمعہ کو چیف منسٹر بسوراج بومائی اور چیف سکریٹری سے ملاقات کریں گے۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

error: Content is protected !!